Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - نماز عصر تنہاء ادا کرنے کے بعد دوبارہ باجماعت ادا کرنا کیسا ہے؟

نماز عصر تنہاء ادا کرنے کے بعد دوبارہ باجماعت ادا کرنا کیسا ہے؟

موضوع: نماز با جماعت

سوال پوچھنے والے کا نام: محمد خالد قریشی       مقام: گوجرخان

سوال نمبر 5354:
عصر کی فرض نماز اکیلے ادا کرنے کے بعد دوبارہ یہی نماز باجماعت ادا کرنا کیسا ہے؟

جواب:

فرائض کی ادائیگی خواہ تنہاء ہی کی جائے‘ اس سے فریضہ ادا ہو جاتا ہے، پھر اسی نماز کو باجماعت دوبارہ ادا کرنا نفل شمار ہوگا۔ اس لیے فجر، عصر اور مغرب میں ایسا کرنا درست نہیں کیوں کہ عصر و فجر کی فرض نماز کے بعد کوئی نفل نماز نہیں ہے اور تین رکعت کی نفل نہیں ہوتی۔ فجر، عصر اور مغرب کے علاوہ کسی نماز میں ایسا کیا جاسکتا ہے، لیکن بعد والی نماز نفل ہی شمار ہوگی،

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

تاریخ اشاعت: 2019-04-10


Your Comments