Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - طواف کے چار چکروں کے بعد وضو میں شک ہو جائے تو کیا حکم ہے؟

طواف کے چار چکروں کے بعد وضو میں شک ہو جائے تو کیا حکم ہے؟

موضوع: وضوء   |  طواف   |  طواف

سوال پوچھنے والے کا نام: عمران احمد       مقام: سعودی عرب

سوال نمبر 5078:
السلام علیکم! حج کے آخر میں طواف وداع کے دوران پہلے چار چکروں کے بعد وضو میں شک پڑھ گیا کہ وضو نہیں ہے پھر دل میں خیال آیا کہ وضو ہے۔ اسی کیفیت میں باقی چکر بھی مکمل کیے یعنی سات چکر پورے کر دیے۔ کیا طواف درست ہے؟

جواب:

اگر دورانِ طواف چار چکروں کے بعد وضو میں شک ہوا یا وضو ٹوٹ گیا تو دوبارہ وضو کر کے بقایا چکر مکمل کیے جائیں‌ گے اور سات پورے ہوں‌ گے۔ اس کے برعکس اگر چار چکروں سے پہلے وضو مشکوک ہوگیا دوبارہ وضو کر کے نئے سرے سے طوف شروع کیا جائے گا۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: محمد شبیر قادری

تاریخ اشاعت: 2018-10-12


Your Comments