کیا اسلام رہبانیت کی اجازت دیتا ہے؟

سوال نمبر:3545
بغیر عذرِ شرعی دنیاوی وجوہات پر کاروباری بائیکاٹ کرنےوالوں کے لیے قرآن و حدیث میں کیا حکم ہے؟

  • سائل: ظفر اقبالمقام: پاکستان
  • تاریخ اشاعت: 21 مئی 2015ء

زمرہ: متفرق مسائل

جواب:

بغیر کسی عذرِ شرعی کے کاروبارِ دنیا سے کنارہ کش ہوجانا یا کسی سے قطع تعلقی کر لینا جائز نہیں۔ رزقِ حلال کی خواہش کرنا اور حلال کے لیے محنت کرنا عبادت ہے۔ اس لیے فقط دنیاوی وجوہات کی بنا پر کاروباری بائیکاٹ کرنا درست نہیں۔ اس کی مزید وضاحت کے لیے ملاحظہ کیجیئے:

رہبانیت کسے کہتے ہیں، اسلام میں اس کا کیا حکم ہے؟

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: محمد شبیر قادری

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • قطع تعلقی کرنے والے رشتے داروں سے صلہ رحمی کا کیا حکم ہے؟
  • مزارات پر پھول چڑھانے اور چراغاں کرنے کا کیا حکم ہے؟