بیوی کو تین طلاقیں دینے کے بارے میں شریعت میں‌ کیا حکم ہے؟

سوال نمبر:952
السلام علیکم! اللہ تعالیٰ آپ کی خیر فرمائے۔ آپ کی سائٹ سے بہت سی معلومات ملتی ہیں۔ میرا سوال یہ ہے کہ ایک بار میری خالہ اور خالو کا جھگڑا ہو گیا ہم 10، 12 لوگ بھی موجود تھے۔ میرے خالوں نے تین بار خالہ کو طلاق دی پھر ہم سارے رشتے دار پاس تھے تو ہم نے ان کی صلح کروا دی، اور وہ اب اکھٹے رہ رہے ہیں۔ شریعت میں ان کے ساتھ کیا معاملہ ہونا چاہیے تھا؟ مہربانی کر کے جواب عنایت فرما دیں۔ شکریہ

  • سائل: محمد طارقمقام: لاہور، پاکستان
  • تاریخ اشاعت: 09 مئی 2011ء

زمرہ: طلاق   |  طلاق مغلظہ(ثلاثہ)

جواب:
آپکے قول کے مطابق تین طلاقیں دی ہیں لہذا بیوی اس پر حرام ہو گئی ہے اور اکھٹے رہنا گناہ کبیرہ ہے، جب تک حلالہ نہ ہو اس کے لیے یہ بیوی حرام ہے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: صاحبزادہ بدر عالم جان

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • قطع تعلقی کرنے والے رشتے داروں سے صلہ رحمی کا کیا حکم ہے؟
  • مزارات پر پھول چڑھانے اور چراغاں کرنے کا کیا حکم ہے؟