کیا شوہر اپنی بیوی کی میت قبر میں اتار سکتا ہے؟

سوال نمبر:5795
کیا شوہر اپنی بیوی کی میت کو قبر میں اتار سکتا ھے؟

  • سائل: محمد اشتیاقمقام: کراچی
  • تاریخ اشاعت: 13 جولائی 2020ء

زمرہ: احکام میت

جواب:

شوہر اپنی بیوی کو قبر میں اتار سکتا ہے البتہ میت کا والد، بھائی، بیٹے یا دیگر محارم شوہر پر مقدم ہیں۔ مفتی امجد علی اعظمی رحمہ اللہ فرماتے ہیں:

عوام میں جو یہ مشہور ہے کہ شوہر عورت کے جنازہ کو نہ کندھا دے سکتا ہے نہ قبر میں اتار سکتا ہے نہ منہ دیکھ سکتا ہے، یہ محض غلط ہے صرف نہلانے اور اسکے بدن کو بلاحائل ہاتھ لگانے کی ممانعت ہے۔

بہارِ شریعت، 1: 813، مکتبۃ المدینہ، کراچی

اس لیے کسی عورت کے انتقال کے بعد شوہر کے لیے اس کے چہرے کو دیکھنا، جنازہ کو کندھا دینا اور قبر میں اُتارنا جائز ہے۔ شریعتِ مطہرہ نے شوہر کے لیے ان امور کی ممانعت نہیں کی ہے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • قطع تعلقی کرنے والے رشتے داروں سے صلہ رحمی کا کیا حکم ہے؟
  • مزارات پر پھول چڑھانے اور چراغاں کرنے کا کیا حکم ہے؟