Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - اللہ تعالیٰ رمضان المبارک میں امتِ محمدی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کو کن تحائف سے نوازتا ہے؟

اللہ تعالیٰ رمضان المبارک میں امتِ محمدی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کو کن تحائف سے نوازتا ہے؟

موضوع: عبادات  |  روزہ

سوال نمبر 538:
اللہ تعالیٰ رمضان المبارک میں امتِ محمدی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کو کن تحائف سے نوازتا ہے؟

جواب:

حضرت جابر بن عبد اﷲ رضی اﷲ عنہما بیان کرتے ہیں کہ رسول اﷲ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا : میری امت کو ماہ رمضان میں پانچ تحفے ملے ہیں جو اس سے پہلے کسی نبی کو نہیں ملے۔

  • أَمَّا وَاحِدَةٌ فَإِنَّهُ إِذَا کَانَ أَوَّلُ لَيْلَةٍ مِنْ شَهْرِ رَمَضَانَ نَظَرَ اﷲُ تَعالی عزوجل إِلَيْهِمْ وَمَنْ نَظَرَ اﷲُ إِلَيْهِ لَمْ يُعَذِّبْهُ أَبَدًا.

1۔ ’’پہلا یہ کہ جب ماہ رمضان کی پہلی رات ہوتی ہے تو اﷲ تعالیٰ ان کی طرف نظر التفات فرماتا ہے اور جس پر اﷲ کی نظر پڑجائے اسے کبھی عذاب نہیں دے گا۔ ‘‘

  • وَأَمَّا الثَّانِيَةُ فَإِنَّ خُلُوْفَ أَفْوَاهِهِمْ حِيْنَ يُمْسُوْنَ أَطْيَبُ عِنْدَ اﷲِ مِنْ رِيْحِ الْمِسْکِ.

2۔ ’’دوسرا یہ کہ شام کے وقت ان کے منہ کی بو اﷲ تعالیٰ کو کستوری کی خوشبو سے بھی زیادہ اچھی لگتی ہے۔‘‘

  • وَأَمَّا الثَّالِثَهُ فَإِنَّ الْمَلاَئِکَةَ تَسْتَغْفِرُ لَهُمْ فِي کُلِّ يَوْمٍ وَلَيْلَةٍ.

3۔ ’’تیسرا یہ کہ فرشتے ہر دن اور رات ان کے لئے بخشش کی دعا کرتے رہتے ہیں۔ ‘‘

  • وَأَمَّا الرَّابِعَةُ فَإِنَّ اﷲَ عزوجل يَأْمُرُ جَنَّتَهُ فَيَقُوْلُ لَهَا : اسْتَعِدِّي وَتَزَيَنِي لِعِبَادِي أَوْشَکُوْا أَنْ يَسْتَرِيْحُوْا مِنْ تَعَبِ الدُّنْيَا إِلَی دَارِي وَکَرَامَتِي.

4۔ ’’چوتھا یہ کہ اﷲ عزوجل اپنی جنت کو حکم دیتے ہوئے کہتا ہے : میرے بندوں کے لئے تیاری کر لے اور مزین ہو جا، قریب ہے کہ وہ دنیا کی تھکاوٹ سے میرے گھر اور میرے دارِ رحمت میں پہنچ کر آرام حاصل کریں۔‘‘

  • وَأَمَّا الْخَامِسَةُ فَإِنَّهُ إِذَا کَانَ آخِرُ لَيْلَةٍ غُفِرَ لَهُمْ جَمِيْعًا.

5۔ ’’پانچواں یہ کہ جب (رمضان کی) آخری رات ہوتی ہے ان سب کو بخش دیا جاتا ہے۔ ‘‘

فَقَالَ رَجُلٌ مِنَ الْقَوْمِ : أَهِيَ لَيْلَةُ الْقَدْرِ؟ فَقَالَ : لَا، أَلَمْ تَرَ إِلَی الْعُمَّالِ يَعْمَلُوْنَ فَإِذَا فَرَغُوْا مِنْ أَعْمَالِهِمْ وُفُّوْا أُجُوْرَهُمْ؟

1. بيهقي، شعب الإيمان، 3 : 303، رقم : 3603
2. منذري، الترغيب والترهيب، 2 : 56، رقم : 1477

’’ایک صحابی نے عرض کیا : کیا یہ شبِ قدر کو ہوتا ہے؟ آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا : نہیں۔ کیا تم جانتے نہیں ہو کہ جب مزدور کام سے فارغ ہو جاتے ہیں تب انہیں مزدوری دی جاتی ہے؟‘‘

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔


Your Comments