کیا نماز میں سنتیں ادا کرنا ضروری ہے؟

سوال نمبر:4303
اگر کوئی شخص اپنے رشتہ داروں کے پاس 14 دن رہے تو کیا وہ نماز میں‌ سنت بھی ادا کرے گا؟ کیا نماز میں‌ سنت پڑھنا ضروری ہے؟ کیا مسافر اس کی جگہ قضاء نماز ادا نہیں‌ کرسکتا؟

  • سائل: فرقان مشتاق اعوانمقام: لاہور
  • تاریخ اشاعت: 21 اگست 2017ء

زمرہ: نماز

جواب:

جب کوئی شخص تقریباً 78 کلومیٹر کے سفر پر نکلے اور وہاں جا کر پندرہ دن یا اس سے کم رہنے کا ارادہ ہو تو نماز قصر کرے گا۔ قصر صرف فرائض میں ہوگی، سنن و نوافل میں نہیں ہوگی۔ نماز میں سنتیں ادا کرنا نبی کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی سنتِ مبارکہ ہے۔ حیل و حجت سے سنن کو ترک کرنا انسان کو روزِ قیامت شفاعتِ نبوی سے محروم کرسکتا ہے۔ مزید وضاحت کے لیے ملاحظہ کیجیے:

نمازِ قصر کے احکام کیا ہیں؟

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: محمد شبیر قادری

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • قطع تعلقی کرنے والے رشتے داروں سے صلہ رحمی کا کیا حکم ہے؟
  • مزارات پر پھول چڑھانے اور چراغاں کرنے کا کیا حکم ہے؟