Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - کنگھی کے ساتھ اترنے والے بالوں کو ٹھکانے لگانے کا کیا حکم ہے؟

کنگھی کے ساتھ اترنے والے بالوں کو ٹھکانے لگانے کا کیا حکم ہے؟

موضوع: معاشرتی آداب   |  وگ (مصنوعی بال)   |  جدید فقہی مسائل

سوال پوچھنے والے کا نام: خدیجہ       مقام: فرانس

سوال نمبر 4242:
السلام علیکم مفتی صاحب! خواتین کنگھی کرتی ہیں تو اس میں بال آ جاتے ہیں، ان بالوں کو ٹھکانے لگانے کا کیا طریقہ ہے؟

جواب:

خواتین سر سے اترنے والے بالوں کو معاشرتی رواج کے مطابق مناسب طریقے سے ٹھکانے لگا سکتی ہیں۔ شریعت اسلامیہ نے اس سلسلے میں کسی مخصوص طریقے کو لازم نہیں کیا۔ اس لیے بالوں‌ کو کسی بھی مروجہ طریقے سے ٹھکانے لگایا جاسکتا ہے۔ اگر بالوں کے عطیات جمع کرنے والے ادارے ان بالوں سے جلنے یا کینسر سمیت کسی بھی وجہ سے بال ختم ہو جانے والوں کیلئے وگ تیار کریں، اور یہ ادارے قابل اعتماد بھی ہوں، تو انہیں بالوں کا عطیہ کیا جا سکتا ہے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: محمد شبیر قادری

تاریخ اشاعت: 2017-07-03


Your Comments