لاؤڈ سپیکر کا استعمال کس حد تک درست ہے؟

سوال نمبر:3425
مسجد میں لاؤڈ سپیکر کا استعمال کس حد تک جائز ہے؟

  • سائل: محمد اے جےمقام: فیصل آباد
  • تاریخ اشاعت: 30 نومبر -0001ء

زمرہ: جدید فقہی مسائل  |  متفرق مسائل

جواب:

آذان کے علاوہ ضرورت کے وقت نماز، خطابِ جمعہ اور دیگر محافل کے لیے لاؤڈ سپیکر استعمال کیا جا سکتا ہے۔ لیکن اس بات کا خیال رکھا جانا چاہیے کہ اہلِ محلہ یا قرب و جوار کے لوگ لاؤڈ سپیکر کے استعمال سے تنگ نہ ہوں۔ لاؤڈ سپیکر استعمال کرنے والے کی ذمہ داری ہے کہ آواز کو مناسب رکھا جائے۔ کسی کی وفات یا کسی ضروری اطلاع کے اعلان کے لیے بھی سپیکر استعمال کیا جاسکتا ہے۔ مزید وضاحت کے لیے ملاحظہ کیجیے:

کیا آذان لاؤڈ سپیکر میں دینا ضروری ہے؟

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: محمد شبیر قادری

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • قطع تعلقی کرنے والے رشتے داروں سے صلہ رحمی کا کیا حکم ہے؟
  • مزارات پر پھول چڑھانے اور چراغاں کرنے کا کیا حکم ہے؟