کیا بے وضو کا قرآن حکیم کو پڑھنا یا چھونا جائز ہے؟

سوال نمبر:341
کیا بے وضو کا قرآن حکیم کو پڑھنا یا چھونا جائز ہے؟

  • تاریخ اشاعت: 26 جنوری 2011ء

زمرہ: وضوء   |  عبادات  |  طہارت

جواب:

بے وضو کا قرآن حکیم کو ہاتھ لگانا حرام اور ناجائز ہے جیسا کہ قرآن حکیم میں ارشاد ہوتا ہے :

لَّا يَمَسُّهُ إِلَّا الْمُطَهَّرُونَO

الواقعة، 56 : 79

’’اس کو پاک (طہارت والے) لوگوں کے سوا کوئی نہیں چُھوئے گاo‘‘

البتہ اگر زبانی پڑھ لیا تو اس میں کوئی حرج نہیں۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • قطع تعلقی کرنے والے رشتے داروں سے صلہ رحمی کا کیا حکم ہے؟
  • مزارات پر پھول چڑھانے اور چراغاں کرنے کا کیا حکم ہے؟