Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - کیا مزاح کے لیے جھوٹ بولنا جائز ہے؟

کیا مزاح کے لیے جھوٹ بولنا جائز ہے؟

موضوع: حرام

سوال پوچھنے والے کا نام: محمد اسماعیل       مقام: سعودی عرب

سوال نمبر 3227:
السلام علیکم! میرا سوال یہ ہے کہ کیا مذاق میں جھوٹ بولنا جائز ہے؟ یا کیا دوسرے لوگوں کو ہنسانے کے لیے جھوٹ بولا جاسکتا ہے؟

جواب:

جھوٹ مذاق میں بولا جائے یا سنجیدہ، ہر دو صورت میں یہ عمل ناپسندیدہ اور موجبِ گناہ ہے۔ اسلام نے مذاح کرنے کی اجازت دی ہے، اور یہ بھی تفریحِ طبعہ کا ایک ذریعہ ہے۔ مزید وضاحت کے لیے ملاحظہ کیجیے:

مزاح کی جائز صورتیں کونسی ہیں؟

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: عبدالقیوم ہزاروی

تاریخ اشاعت: 2014-05-30


Your Comments