Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - اجتماعی قربانی کے حصے کیسے تقسیم کیے جاتے ہیں؟

اجتماعی قربانی کے حصے کیسے تقسیم کیے جاتے ہیں؟

موضوع: قربانی   |  مسائل قربانی

سوال پوچھنے والے کا نام: محمد انور قادری       مقام: ممبئی

سوال نمبر 3011:
السلام علیكم! اجتماعی قربانی میں 3 اشخاص کی 6 حصے حلال کمائی کے ہیں اور 1 ایک شخص کی کمائی فلموں کا پوسٹر بنا کر کمائی گئی ہے۔ تو کیا اس صورت میں ان 4 اشخاص کی 7 حصوں والی قربانی جائز ہو گی؟

جواب:

اب ہمیں یہ معلوم نہیں کہ کس طرح کی فلمیں ہیں جن کے پوسٹر وہ بناتا ہے؟ اگر تو اصلاح اور تعلیم وتربیت پر مبنی فلمیں ہیں پھر تو درست ہے۔ اس کے برعکس اگر بے حیائی اور برائی پر مبنی فلموں کے پوسٹر بناتا ہے تو کمائی جائز نہیں ہے۔ جب آپ کو معلوم ہو کہ فلاں بندے کی کمائی حرام ہے تو اس کو قربانی میں شامل نہ کریں چونکہ ایسا کرنا جائز نہیں ہے، اور جہاں تک حصوں کی تقسیم کا تعلق ہے تو چار لوگوں میں سے تین بندے دو دو حصے ڈال لیں ایک بندہ ایک حصہ ڈال کر سات حصے پورے کر لیں۔

مزید مطالعہ کے لیے یہاں کلک کریں
کیا قربانی کے جانور گائے میں سے 6 حصے ہو سکتے ہیں؟

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: عبدالقیوم ہزاروی

تاریخ اشاعت: 2014-01-02


Your Comments