Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - عورت کا بناؤ سنگھار کس حد تک جائز ہے؟

عورت کا بناؤ سنگھار کس حد تک جائز ہے؟

موضوع: جدید فقہی مسائل

سوال پوچھنے والے کا نام: مہناز جبین       مقام: گوجرانوالہ

سوال نمبر 2865:
السلام علیکم میرا سوال یہ ہے کہ عورت کا بناؤ سنگھار کس حد تک جائز ہے؟ اگر شادی پر جدید دور کے مطابق لباس نہ ہو تو لوگ طعنے دیتے ہیں۔ شرعی رہنمائی فرمائیں۔

جواب:

لوگوں کے طعنے دیکھ کر اپنے آپ کو قرض تلے دبا کر مارنے کی ضرورت نہیں ہے۔ اپنی طاقت کے مطابق آسانی سے جہاں تک ہو سکے اچھا لباس پہننا چاہیے۔

مزید مطالعہ کے لیے درج ذیل سوالات پر کلک کریں۔

  1. مسلمان خواتین کا میک اپ کی غرض سے بیوٹی پارلر میں جانا کیسا ہے؟
  2. بناؤ سنگھار کس حد تک اور کس کے لئے جائز ہے؟

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: عبدالقیوم ہزاروی

تاریخ اشاعت: 2013-11-16


Your Comments