کیا ایک بار ایجاب وقبول کرنے سے نکاح ہو جاتا ہے؟

سوال نمبر:2836
السلام علیکم میرا سوال یہ ہے کہ نکاح کے وقت “قبول ہے“ مرد اور عورت نے ایک بار کہا۔ کیا یہ الفاظ تین مرتبہ نہیں دہراتے؟ ایک بار اقرار سے نکاح میں کیا فرق پڑتا ہے؟

  • سائل: محمد حنیف قادریمقام: اسلام آباد
  • تاریخ اشاعت: 23 ستمبر 2013ء

زمرہ: نکاح

جواب:

دستور کے مطابق ایک بار ہی ایجاب وقبول کرنے سے نکاح منعقد ہو جاتا ہے، مگر تین بار تاکید کے لیے دہراتے ہیں تاکہ کوئی مغالطہ نہ رہے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: عبدالقیوم ہزاروی

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • قطع تعلقی کرنے والے رشتے داروں سے صلہ رحمی کا کیا حکم ہے؟
  • مزارات پر پھول چڑھانے اور چراغاں کرنے کا کیا حکم ہے؟