کیا جہیز کے سامان پر قربانی کرنا واجب ہو جاتا ہے؟

سوال نمبر:2287
السلام علیکم میرا سوال یہ ہے کہ اگر کسی عورت کے پاس صرف جہیز کا سامان ہے اور تین تولے سونا ہے لیکن اس کے پاس نقدی رقم بالکل نہیں‌ ہے تو کیا اس کو اپنا سامان بیچ کر قربانی دینا ہو گی؟

  • سائل: محمد اعظم مغل قادریمقام: سعودی عربیہ
  • تاریخ اشاعت: 13 دسمبر 2012ء

زمرہ: قربانی کے احکام و مسائل

جواب:

جہیز کے سامان کو نصاب میں شمار نہیں کیا جائے گا۔ اور سونا بھی ساڑھے سات تولے سے کم ہے اگر ساڑھے سات تو سونا ہوتا تو اس کو بیچ کر قربانی لگانا واجب ہوتی۔ لہٰذا اس عورت پر قربانی واجب نہیں ہے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: عبدالقیوم ہزاروی

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • کاروباری شراکت کے اسلامی اصول کیا ہیں؟
  • قطع تعلقی کرنے والے رشتے داروں سے صلہ رحمی کا کیا حکم ہے؟