Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - کیا خاوند کے بھانجے بھتیجے بیوی کے لیے محرم ہیں؟

کیا خاوند کے بھانجے بھتیجے بیوی کے لیے محرم ہیں؟

موضوع: معاملات

سوال پوچھنے والے کا نام: محمد حسیب مرزا       مقام: سیالکوٹ، پاکستان

سوال نمبر 2126:
السلام علیکم بہن اور بھائی کے بیٹے یعنی بھانجے اور بھتیجے کے محرم ہونے کے بارے میں‌ واضح حکم قرآن پاک میں‌ موجود ہے۔ کیا خاوند کے بھانجے بھتیجے بیوی کے لیے محرم ہیں؟

جواب:

خاوند کے بھانجھے اور بھتیجے یعنی اس کی بہن اور بھائی کے بیٹے بیوی کے لیے غیر محرم ہیں۔ آپ کی بیوی کے لیے ان سے شرعی پردہ کرنا واجب ہے۔ محرم وہ رشتے ہوتے ہیں جن کا آپس میں نکاح جائز نہیں ہوتا۔ قرآن مجید میں ان کے محرم ہونے کا کوئی ذکر موجود نہیں ہے۔ یہ غیر محرم ہیں۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: حافظ محمد اشتیاق الازہری

تاریخ اشاعت: 2012-09-18


Your Comments