Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - وتر کی نماز دو رکعات علیحدہ اور ایک علیحدہ پڑھنا کیسا ہے؟

وتر کی نماز دو رکعات علیحدہ اور ایک علیحدہ پڑھنا کیسا ہے؟

موضوع: عبادات  |  نماز  |  وتر کی رکعات

سوال پوچھنے والے کا نام: محمد اکرم       مقام: تلہ گنگ

سوال نمبر 2087:
بعض ممالک میں وتر کی نماز دو رکعات علیحدہ اور ایک رکعت علیحدہ پڑھی جاتی ہے کیا ہمیں جماعت کے ساتھ وتر ادا کرنے چاہیے یا الگ پڑھنی چاہیے (رمضان میں مسئلہ ہوتا ہے)۔

جواب:

احناف کے نزدیک ایسا جائز نہیں ہے۔ وتر کی تینوں رکعات ایک ہی سلام کے ساتھ پڑھنی چاہیے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: حافظ محمد اشتیاق الازہری

تاریخ اشاعت: 2012-09-06


Your Comments