Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - شام غریباں سے کیا مراد ہے؟

شام غریباں سے کیا مراد ہے؟

موضوع: شہید کے احکام   |  غسل ،کفن، دفن

سوال پوچھنے والے کا نام: عاطف مصطفوی       مقام: لاہور، پاکستان

سوال نمبر 1398:
شام غریباں سے کیا مراد ہے؟ اس کی حقیقت کیا ہے؟

جواب:
شام غریباں دراصل اس شام کو کہتے ہیں جو معرکہ کربلا کی پہلی شام تھی، جس شام کو یزیدی فوجوں نے شہداء کربلا کی نعشوں کی بے حرمتی کی تھی۔ انہیں شہید کرنے کے بعد ان کی نعشوں پر گھوڑے دوڑائے تھے اور ان کا موسلہ کیا تھا۔ یزیدیوں نے اپنے مقتولین کو دفن کر دیا لیکن شہداء کربلا دو دن تک بے گور و کفن کربلا کے تپتے میدان میں پڑے رہے۔ پھر تیسرے دن ایک قبیلے والوں نے ان پر نماز جنازہ ادا کر کے انہیں دفن کیا۔ خانوادہ رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی حرمات کو سرعام گلی کوچوں میں پھیرایا گیا۔ یہ کربلا کی پہلی شام تھی جس میں خانوادہ رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم اور حضرت امام حسین رضی اللہ عنہ کے ساتھ مسلمانوں پر ظلم و ستم کے پہاڑ ڈھائے گئے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: حافظ محمد اشتیاق الازہری

تاریخ اشاعت: 2012-02-02


Your Comments