Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - عیسائیوں کا مسجد نبوی میں عبادت کرنے کا ثبوت کیا ہے؟

عیسائیوں کا مسجد نبوی میں عبادت کرنے کا ثبوت کیا ہے؟

موضوع: عبادات  |  معاملات  |  اقلیتوں کے حقوق و فرائض

سوال پوچھنے والے کا نام: طیب طاہر       مقام: جہلم ، پاکستان

سوال نمبر 1368:
گزارش ہے کہ عیسائیوں کا گروپ رسالت مآب صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم میں مسجد میں کسی معاملے کےلیئے حاضر ہوا تھا اور دوران گفتگو عیسائیوں نے عبادت بمع شمولیت موسیقی اجازت مانگی اور اجازت مل گئی تھی، یہ حدیث پاک سنی بھی ہے اور کافی عرصہ کہیں پڑھی بھی تھی۔ اس حدیث پاک کا جن جن کتب میں ذکر ہے ان کا مکمل ریفرینس درکار ہے، آپکی عنایت کا شکر گزار رہوں گا، شکریہ!

جواب:

نجران کے عیسائیوں کا وفد مسجد نبوی میں آیا اور جب ان کی عبادات کا وقت ہو گیا تو انہوں نے خود نماز پڑھنا شروع کر دی اور حضور صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے انہیں نماز پڑھنے کی اجازت دے دی۔ لیکن موسیقی کے ساتھ نماز پڑھنا اور حضور علیہ الصلاۃ والسلام کا موسیقی کے ساتھ اجازت دینا کسی روایت میں نہیں ہے، صرف نماز پڑھنے کی اجازت دینا روایات میں آیا ہے۔

حوالہ جات درج ذیل ہیں۔

  1. السيرة النبوية ج 2 / 224

  2. الطبقات الکبری ج 1 / 357

  3. البداية والنهاية ج 5 / 51

  4. الروض الانف شرح سيرت ابن هشام

(مزید مطالعہ کے لیے یہاں کلک کریں)

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: حافظ محمد اشتیاق الازہری

تاریخ اشاعت: 2012-08-03


Your Comments