کیا کوئی مسلم عورت کسی غیر مسلم سے شادی کے بعد مغفرت کی متحمل ہوگی؟

سوال نمبر:1203
السلام علیکم اگر کوئی مسلم عورت کسی غیر مذہب سے شادی کر لے اور بچے بھی ہو جائیں تو کیا اس کی مغفرت ہے؟ مسلم عورت اپنے دین کی متحمل ہی رہی ہو اور اپنے نماز روزہ کی باپندی بھی کرتی رہی ہو۔ تو کیا اسلام میں اس کو مغفرت حاصل ہے؟

  • سائل: صائمہ خانمقام: انگلینڈ
  • تاریخ اشاعت: 06 اکتوبر 2011ء

زمرہ: نکاح

جواب:

کسی مسلمان عورت کا غیر مسلم سے نکاح کرنا حرام ہے اور یہ نکاح منعقد نہیں ہوتا۔ اس عورت نے حرام کام کیا ہے۔ اللہ تعالی سے اخلاص کے ساتھ توبہ کرے اور اس غیر مسلم شخص سے فوراً الگ ہو جائے۔ اللہ پاک بخشنے والا مہربان ہے، توبہ کا دروازہ قیامت تک کھلا ہے، لیکن آئندہ کے لیے ایسا فعل ہرگز نہ کریں۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: صاحبزادہ بدر عالم جان

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • کاروباری شراکت کے اسلامی اصول کیا ہیں؟
  • قطع تعلقی کرنے والے رشتے داروں سے صلہ رحمی کا کیا حکم ہے؟