اگر کوئی شخص یہ کہے کہ میرا قدم تمام ولیوں کی گردنوں پر ہے تو اس کا کیا حکم ہے؟

سوال نمبر:1185
السلام علیکم
اگر کوئی شخْص یہ کہے کہ میرا قدم تمام ولیوں کی گردنوں پر ہے تو اس کا کیا حکم ہے؟ اور وہ شخص اس بات کی دلیل یہ دیتا ہے کہ مجھے پیغمبر صلی اللہ علیہ وسلم نے کہا ہے کیونکہ میں عاشق ہوں ان کا۔ براہ مہربانی اس کی وضاحت فرما دیں۔

  • سائل: آصف محمودمقام: گوجرانوالہ
  • تاریخ اشاعت: 08 مارچ 2012ء

زمرہ: تصوف

جواب:

اگر ایسا دعویٰ سیدنا غوث الاعظم رضی اللہ عنہ کے علاوہ کوئی اور شخص کرتا ہے تو صرف گپ شپ ہی ہے۔ سیدنا غوث الاعظم رضی اللہ عنہ کی طرح کوئی عالم اور عامل نہیں ہے۔ اگر کوئی عام شخص ایسا دعویٰ کرتا ہے تو ایسے کلمات کے پیچھے دنیا داری، مادیت اور نفس پرستی شامل ہے۔ لوگ دنیا داری اور دنیا کمانے کے لیے ایسی کرامتیں بیان کرتے ہیں، یا خود مقبولیت حاصل کرنے کے لیے ایسی باتیں کرتے ہیں۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: حافظ محمد اشتیاق الازہری

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • قطع تعلقی کرنے والے رشتے داروں سے صلہ رحمی کا کیا حکم ہے؟
  • مزارات پر پھول چڑھانے اور چراغاں کرنے کا کیا حکم ہے؟