Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - کیا دیوبندی اور وہابی کی امامت میں نماز ہوجاتی ہے؟

کیا دیوبندی اور وہابی کی امامت میں نماز ہوجاتی ہے؟

موضوع: عبادات  |  نماز

سوال پوچھنے والے کا نام: عاقب حسین       مقام: بحرین

سوال نمبر 1067:
کیا دیوبندی اور وہابی کی امامت میں نماز ہوجاتی ہے؟

جواب:
اگر کوئی شخص تعظیم رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم، تعظیم انبیاء، صحابہ کرام، اہل بیت اطہار اور اولیاء کرام کا ادب کرنے والا ہو تو اس کے پیچھے نماز جائز ہے، خواہ وہ اپنے آپ کو کسی بھی فرقے سے منسوب کرتا ہو۔

جب تک کسی شخص کے بارے میں یہ معلوم نہ ہو کہ یہ گستاخ یا بے ادب ہے تو اس کے پیچھے نماز پڑھنا جائز ہے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: صاحبزادہ بدر عالم جان

تاریخ اشاعت: 2011-06-21


Your Comments