شب برات کیا ہے اور اس کی شرعی حیثیت کیا ہے؟

سوال نمبر:934
شب برات کیا ہے اور اس کی شرعی حیثیت کیا ہے؟

  • سائل: عاصمی وسیم گیلانیمقام: دبئی عرب امارات
  • تاریخ اشاعت: 30 اپریل 2011ء

زمرہ: عبادات  |  زیارت قبور   |  روزہ

جواب:
شعبان المعظم اسلامی کیلنڈر کا آٹھواں مہینہ ہے اس ماہ کی 15 تاریخ کی رات کو شب برات کہتے ہیں۔ حدیث پاک میں آتا ہے کہ اس رات کو پورے سال کے لیے رزق، موت اور باقی حساب کتاب لکھا جاتا ہے۔

اس رات کو اللہ تعالیٰ سے اپنے گناہوں کی معافی اور مغفرت طلب کرنا چاہیے، رات کو عبادت کرنا اور دن کا روزہ رکھنا مستحب ہے۔

حدیث پاک میں آتا ہے کہ اس رات کو اللہ مجدہ اپنی شان کے لائق آسمان دنیا پر نزول فرماتے ہیں اور فرماتے ہیں کہ ہے کوئی معافی مانگنے والا کہ اسے معاف کردوں۔ ہے کوئی رزق مانگنے والا کہ اسے رزق عطا کر دو۔

ترمذی شریف میں آتا ہے کہ آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم اس رات کو قبرستان جاتے اور اصحاب قبور کے لیے مغفرت کی دعا کرتے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: صاحبزادہ بدر عالم جان

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • کاروباری شراکت کے اسلامی اصول کیا ہیں؟
  • قطع تعلقی کرنے والے رشتے داروں سے صلہ رحمی کا کیا حکم ہے؟