والدین کی زندگی میں‌ تقسیم کی گئی جائیداد پر وراثت کے احکام لاگو ہوں‌ گے؟

سوال نمبر:3927
السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ! کیا ٹھیکے پر دی جانے والی زمین سے حاصل کردہ رقم سے اولاد (بیٹا، بیٹی) اپنا حصہ لینے کا حق رکھتے ہیں؟ رقم کی تقسیم کس طرح ہوگی؟ جبکہ والدین حیات ہوں اور زمین بھی ان کے نام پر ہو۔ شریعت کی روسے رہنمائی فرما دیں۔

  • سائل: مقصودالہی عطاریمقام: صادق آباد، جنوبی پنجاب
  • تاریخ اشاعت: 20 جون 2016ء

زمرہ: تقسیمِ وراثت

جواب:

والدین اپنی زندگی میں بچوں کی ضرورت یا اپنی مرضی کے مطابق جس کو جتنی رقم چاہیں، دے سکتے ہیں۔ والدین کی زندگی میں دی گئی جائیداد پر وراثت کے احکام لاگو نہیں ہوتے۔ لیکن اس بات کو یقینی بنانا ضروری ہے کہ اولاد میں کسی کے ساتھ ظلم نہ ہو۔ ہر ایک کی ضرورت میں کمی پیشی ہو سکتی ہے، اس لیے والدین حسبِ ضرورت تقسیم کر سکتے ہیں۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: محمد شبیر قادری

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • کاروباری شراکت کے اسلامی اصول کیا ہیں؟
  • وطن سے محبت کی شرعی حیثیت کیا ہے؟