کیا حاجی منیٰ کی بجائے کسی دوسرے ملک میں‌ قربانی کر سکتا ہے؟

سوال نمبر:2226
السلام علیکم میرا سوال یہ ہے کہ جو قربانی حج کے دوران لازمی ہے، کیا ہم منہاج القرآن کی مرکزی اجتماعی قربانی میں اس کا حصہ ڈال سکتے ہیں یا صرف حج کے مقام پر ہی کرنا ضروری ہے؟

  • سائل: ایچ۔ایم۔سعیدمقام: لاہور، پاکستان
  • تاریخ اشاعت: 17 اکتوبر 2012ء

زمرہ: قربانی کے احکام و مسائل

جواب:

جو قربانی حج کے دوران کرنا لازمی ہے وہ آپ کو حرمین ہی میں کرنی ہو گی۔ اگر آپ ایک سے زائد قربانیاں کرنا چاہتے ہیں تو پھر ایک حج کے دوران حرمین ہی میں کر لیں دوسری قربانی آپ جس جگہ دینا چاہیں وہ آپ کی مرضی ہے۔اس میں آپ حصہ ڈال لیں یا کسی کو پیسے بھیج دیں وہ آپ کی طرف سے کسی دوسری جگہ قربانی کر سکتا ہے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: محمد شبیر قادری

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • قطع تعلقی کرنے والے رشتے داروں سے صلہ رحمی کا کیا حکم ہے؟
  • مزارات پر پھول چڑھانے اور چراغاں کرنے کا کیا حکم ہے؟