اسلام میں‌ سُر، ساز اور وجد و رقص کا کیا حکم ہے؟

سوال نمبر:724
میں یہ جاننا چاہتا ہوں کہ کس قسم کی موسیقی جائز ہے اور کون سے آلات موسیقی کا استعمال جائز ہے؟

  • سائل: عبدالقادرمقام: نامعلوم
  • تاریخ اشاعت: 15 مارچ 2011ء

زمرہ: موسیقی/قوالی

جواب:

قوالی کے اشعار توحید، رسالت، دین کے احکام اور صحابہ کرام، اہل بیت اطہار اور اولیاء کرام کی منقبت پر مشتمل ہوں تو جائز ہیں، اور اس میں تبلہ کا استعمال بھی جائز ہے۔ باقی مرد و زن کا اختلاط ناجائز ہے اس میں لہو لعب اور دیگر غیر شرعی امور بالکل ناجائز ہیں۔

قوالی کرنے والے اور سننے والے باوضو ہوں اور توجہ اللہ اور رسول علیہ الصلوۃ والسلام کی تعریف اور نعت پر ہو۔

اس کا تفصیلی جواب ہم نے ماہنامہ منہاج القرآن میں تین اقساط میں دیا تھا۔ اس کے لیے آپ درج ذیل لنک دیکھیں۔

  1. سر، ساز اور وجد و رقص (حصہ اول)
  2. سر، ساز اور وجد و رقص (حصہ دوم)
  3. سر، ساز اور وجد و رقص (حصہ سوم)

مزید معلومات کے لئے ذیل میں مہیا کردہ ویڈیو کلپس ملاحظہ فرمائیں:

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: عبدالقیوم ہزاروی

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • قطع تعلقی کرنے والے رشتے داروں سے صلہ رحمی کا کیا حکم ہے؟
  • مزارات پر پھول چڑھانے اور چراغاں کرنے کا کیا حکم ہے؟