کیا صدقہ کے پیسوں سے قربانی کا جانور خریدا جاسکتا ہے؟

سوال نمبر:5769
کیا صدقے کے پیسوں سے عیدالاضحیٰ کی قربانی کی جا سکتی ہے؟

  • سائل: کاشف حمیدمقام: فیصل آباد
  • تاریخ اشاعت: 27 جولائی 2020ء

زمرہ: قربانی کے احکام و مسائل

جواب:

جب حقدار کو صدقہ دیا جاتا ہے تو صدقہ وصول کرنے کے بعد وہ اس کا مالک بن جاتا ہے، اور اسے حقِ تصرف حاصل ہو جاتا ہے، اس کی مرضی ہے چاہے تو اپنی ضرورت پر صَرف کرے یا راہِ خدا میں دے۔ اگر انہی پیسوں سے وہ جانور خرید کر قربانی کرے تو بھی حرج نہیں، کیونکہ صدقہ کے پیسوں سے قربانی خریدنے کی کوئی ممانعت نہیں ہے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: محمد شبیر قادری

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • قطع تعلقی کرنے والے رشتے داروں سے صلہ رحمی کا کیا حکم ہے؟
  • مزارات پر پھول چڑھانے اور چراغاں کرنے کا کیا حکم ہے؟