اگر شوہر ملاطفت میں‌ بیوی کو ماں‌ کہہ دے تو کیا حکم ہے؟

سوال نمبر:5422
السلام علیکم مفتی صاحب! اگر بیوی اپنے شوہر کا والدہ کی طرح خیال کرتی ہے اور کسی بات پر شوہر بیوی سے کہتا ہے ’ٹھیک ہے ماں‘ تو اس کا کیا حکم ہے؟

  • سائل: سویرامقام: پاکستان
  • تاریخ اشاعت: 01 مئی 2019ء

زمرہ: ظہار کے احکام

جواب:

شوہر اپنی بیوی کو ازراہِ ملاطفت ماں، میری ماں یا بیٹی کہہ دے یا بیوی اپنے شوہر کو باپ، بیٹا وغیرہ کہہ دے تو اس سے نکاح نہیں ٹوٹتا اور نہ کوئی حرمت لازم آتی ہے۔ البتہ میاں بیوی کا آپس میں ایک دوسرے کو اس طرح کے الفاظ کہنا مکروہ ہے۔ ان الفاظ‌ سے ظہار اس وقت ثابت ہوگا جب شوہر کی نیت ظہار کی ہوگی۔ اگر شوہر نے یہ الفاظ محض‌ پیار محبت اور توقیر کے لیے استعمال کیے ہیں‌ تو ظہار نہیں‌ ہوگا۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • قطع تعلقی کرنے والے رشتے داروں سے صلہ رحمی کا کیا حکم ہے؟
  • مزارات پر پھول چڑھانے اور چراغاں کرنے کا کیا حکم ہے؟