Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - اگر شوہر ملاطفت میں‌ بیوی کو ماں‌ کہہ دے تو کیا حکم ہے؟

اگر شوہر ملاطفت میں‌ بیوی کو ماں‌ کہہ دے تو کیا حکم ہے؟

موضوع: ظہار(بیوی کو محرمات سے تشبیہ دینا)

سوال پوچھنے والے کا نام: سویرا       مقام: پاکستان

سوال نمبر 5422:
السلام علیکم مفتی صاحب! اگر بیوی اپنے شوہر کا والدہ کی طرح خیال کرتی ہے اور کسی بات پر شوہر بیوی سے کہتا ہے ’ٹھیک ہے ماں‘ تو اس کا کیا حکم ہے؟

جواب:

شوہر اپنی بیوی کو ازراہِ ملاطفت ماں، میری ماں یا بیٹی کہہ دے یا بیوی اپنے شوہر کو باپ، بیٹا وغیرہ کہہ دے تو اس سے نکاح نہیں ٹوٹتا اور نہ کوئی حرمت لازم آتی ہے۔ البتہ میاں بیوی کا آپس میں ایک دوسرے کو اس طرح کے الفاظ کہنا مکروہ ہے۔ ان الفاظ‌ سے ظہار اس وقت ثابت ہوگا جب شوہر کی نیت ظہار کی ہوگی۔ اگر شوہر نے یہ الفاظ محض‌ پیار محبت اور توقیر کے لیے استعمال کیے ہیں‌ تو ظہار نہیں‌ ہوگا۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

تاریخ اشاعت: 2019-05-01


Your Comments