نبی اکرم ﷺ کا نسب نامہ کیا ہے؟

سوال نمبر:5224
السلام علیکم! نبی اکرم ﷺ کا سلسلہ نسب کیا ہے؟

  • سائل: محمد ہاشم عطاریمقام: کراچی
  • تاریخ اشاعت: 11 جنوری 2019ء

زمرہ: فضائلِ نبوی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم

جواب:

نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کا سلسلہء نسب تمام عالم کے سلاسلِ انساب سے اعلیٰ و برتر ہے۔ حضرت واثلہ بن اسقع رضی اللہ عنہ سے مروی ہے کہ نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا:

سَمِعْتُ رَسُوْلَ ﷲِ صلی الله علیه وآله وسلم یَقُوْلُ: إِنَّ ﷲَ اصْطَفٰی کِنَانَةَ مِنْ وَلَدِ إِسْمَاعِیْلَ، وَاصْطَفٰی قُرَیْشًا مِنْ کِنَانَةَ، وَاصْطَفٰی مِنْ قُرَیْشٍ بَنِي هَاشِمٍ، وَاصْطَفَانِي مِنْ بَنِي هَاشِمٍ.

میں نے نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کو فرماتے ہوئے سنا کہ اللہ تعالیٰ نے اولادِ اسماعیل علیہ السلام سے بنی کنانہ کو منتخب کیا اور اولادِ کنانہ میں سے قریش کو منتخب کیا اور قریش میں سے بنی ہاشم کو منتخب کیا اور بنی ہاشم میں سے مجھے شرفِ انتخاب بخشا۔

  1. مسلم، الصحیح، کتاب الفضائل، باب فضل نسب النبي صلی الله علیه وآله وسلم، 4/1782، الرقم: 2276
  2. ترمذي، السنن، کتاب المناقب عن رسول اﷲ صلی الله علیه وآله وسلم: باب ما جاء في فضل النبي صلی الله علیه وآله وسلم، 5/583، الرقم: 3605

اور ام المؤمنین سیدہ عائشہ صدیقہ رضي اﷲ عنہا سے مروی ہے کہ نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم فرماتے ہیں:

عَنْ جِبْرِیْلَ علیه السلام قَالَ: قَلَّبْتُ مَشَارِقَ الْأَرْضِ وَمَغَارِبَهَا فَلَمْ أَجِدْ رَجُـلًا أَفْضَلَ مِنْ مُحَمَّدٍ، وَلَمْ أَرَ بَیْتًا أَفْضَلَ مِنْ بَیْتِ بَنِي هَاشِمٍ.

’’حضرت جبریل علیہ السلام نے عرض کیا: (یا رسول اﷲ!) میں نے تمام زمین کے اطراف و اکناف اور گوشہ گوشہ کو چھان مارا، مگر نہ تو میں نے محمد مصطفی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم سے بہتر کسی کو پایا اور نہ ہی میں نے بنو ہاشم کے گھر سے بڑھ کر بہتر کوئی گھر دیکھا۔‘‘

  1. طبراني، المعجم الأوسط، 6/237، الرقم: 6285، واللالکائي في اعتقاد أهل السنة، 4/752، الرقم: 1402
  2. الھیثمي، مجمع الزوائد، 8/217

حضرت عبداللہ بن عباس رضی اللہ عنہما سے مروی ہے کہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم جب اپنا نسب بیان فرماتے تو عدنان سے تجاوز نہ فرماتے، عدنان تک پہنچ کر رُک جاتے۔ عدنان تک کے نسب نامہ کی صحت پر تمام محدثین، سیرت نگاروں اور علمائے انساب کا اتفاق ہے۔ عدنان کے اولادِ اسماعيل سے ہونے پر بھی کوئی اختلاف نہیں۔ البتہ عدنان سے اوپر شجرۂ نسب میں علماء کے ہاں اختلاف ہے۔ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کا محقق اور مسلّم سلسلہ نسب درج ذیل ہے:

محمد صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم بن عبداللہ بن عبدالمطلب بن ہاشم بن عبدمناف بن قصی بن کلاب بن مرۃ بن کعب بن لوی بن غالب بن فہر بن مالک بن النضر بن کنانہ بن خزیمہ بن مدرکہ بن الیاس بن مضر بن نزار بن معد بن عدنان۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • کاروباری شراکت کے اسلامی اصول کیا ہیں؟
  • وطن سے محبت کی شرعی حیثیت کیا ہے؟