کیا حالتِ جنابت میں حدیث کی کتاب کو چھونا جائز ہے؟

سوال نمبر:4509
ناپاکی کی حالت میں حدیث کی کتاب کو چھوناکیسا ہے؟

  • سائل: محمد خالد کٹیہارمقام: بہار، انڈیا
  • تاریخ اشاعت: 29 نومبر 2017ء

زمرہ: نجاستیں

جواب:

کتبِ احادیث میں مقدس احکام، قرآنی آیات، آیات کی تفسیر و احکام درج ہوتے ہیں اس لیے حالتِ جنابت میں حدیث کی کتاب کو بلاحائل چھونے سے گریز کرنا چاہیے۔ اللہ تبارک و تعالیٰ کا ارشاد ہے:

لَّا يَمَسُّهُ إِلَّا الْمُطَهَّرُونَO

اس کو پاک (طہارت والے) لوگوں کے سوا کوئی نہیں چُھوئے گا۔

الْوَاقِعَة، 56: 76

اس لیے جن کتب میں قرآنی احکام، احادیث درج ہوں‘ انہیں حالتِ جنابت میں چھونا جائز نہیں ہے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: محمد شبیر قادری

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • قطع تعلقی کرنے والے رشتے داروں سے صلہ رحمی کا کیا حکم ہے؟
  • مزارات پر پھول چڑھانے اور چراغاں کرنے کا کیا حکم ہے؟