Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - کیا حالتِ جنابت میں حدیث کی کتاب کو چھونا جائز ہے؟

کیا حالتِ جنابت میں حدیث کی کتاب کو چھونا جائز ہے؟

موضوع: نجاستیں

سوال پوچھنے والے کا نام: محمد خالد کٹیہار       مقام: بہار، انڈیا

سوال نمبر 4509:
ناپاکی کی حالت میں حدیث کی کتاب کو چھوناکیسا ہے؟

جواب:

کتبِ احادیث میں مقدس احکام، قرآنی آیات، آیات کی تفسیر و احکام درج ہوتے ہیں اس لیے حالتِ جنابت میں حدیث کی کتاب کو بلاحائل چھونے سے گریز کرنا چاہیے۔ اللہ تبارک و تعالیٰ کا ارشاد ہے:

لَّا يَمَسُّهُ إِلَّا الْمُطَهَّرُونَO

اس کو پاک (طہارت والے) لوگوں کے سوا کوئی نہیں چُھوئے گا۔

الْوَاقِعَة، 56: 76

اس لیے جن کتب میں قرآنی احکام، احادیث درج ہوں‘ انہیں حالتِ جنابت میں چھونا جائز نہیں ہے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: محمد شبیر قادری

تاریخ اشاعت: 2017-11-29


Your Comments