Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - کیا عیدگاہ کی زمین پر مدرسہ تعمیر کرنا جائز ہے؟

کیا عیدگاہ کی زمین پر مدرسہ تعمیر کرنا جائز ہے؟

موضوع: وقف   |  وقف کے مسائل

سوال پوچھنے والے کا نام: توصیف ایوبی قاسمی       مقام: جدہ سعودی عرب

سوال نمبر 4402:
السلام علیکم و رحمۃ اللہ و برکاتہ! عیدگاہ کی زمین پر مدرسہ کی تعمیر کرنا جائز ہے یا نہیں؟ اور اگر عیدگاہ اور اس سے متصل مدرسے کی زمین کو بیچ کر کسی دوسری کھلی جگہ پر مدرسہ اور عید گاہ بنایا جائے تو کیا ایسا کرنا جائز ہوگا؟ امید ہے جواب از جلد عنایت فرمائیں گے

جواب:

عیدگاہ کی زمین وقف کی زمین ہے، اگر وقف کے منتظمین مدرسہ قائم کرنے پر راضی ہیں‌ تو عیدگاہ کی جگہ پر مدرسہ قائم کرنے میں‌ کوئی حرج نہیں۔ یہ خیال رکھا جائے کہ لوگوں کے لئے مدرسہ اور عیدگاہ دونوں‌ میں سہولت رہے۔ اگر متبادل زمین موجود ہے تو عیدگاہ کی زمین پر مدرسہ قائم کرسکتے ہیں۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: محمد شبیر قادری

تاریخ اشاعت: 2017-11-30


Your Comments