نماز میں سلام پھیرنے کا طریقہ کیا ہے؟

سوال نمبر:438
نماز میں سلام پھیرنے کا طریقہ کیا ہے؟

  • تاریخ اشاعت: 27 جنوری 2011ء

زمرہ: عبادات  |  عبادات

جواب:

نماز میں سلام پھیرنے کاطریقہ حدیثِ مبارکہ سے ثابت ہے۔ حضرت عامر بن سعد اپنے والد حضرت سعد رضی اللہ عنہ سے روایت کرتے ہیں کہ وہ حضورنبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کو دائیں اور بائیں جانب سلام پھیرتے ہوئے دیکھتے تھے، یہاں تک کہ (رُخِ انور موڑنے کی وجہ سے) حضورنبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے رخسار مبارک کی سفیدی دیکھ لیتے۔‘‘

مسلم، الصحيح، کتاب المساجد و مواضع الصلاة، باب السلام للتحليل من الصلاة عند فراغها، 1 : 409، رقم : 582

ایک اور حدیث میں حضرت عمار بن یاسر رضی اﷲ عنھما سے مروی ہے کہ حضورنبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم دائیں اور بائیں یوں سلام پھیرتے ہوئے اَلسَّلَامُ عَلَيْکُمْ وَرَحْمَةُ اﷲِ، اَلسَّلَامُ عَلَيْکُمْ وَرَحْمَةُ اﷲِ. کہتے کہ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے رخسار مبارک کی سفیدی نظر آنے لگتی۔

ابن ماجه، السنن، کتاب اقامة الصلاة والسنة فيها، باب التسليم، 1 : 495، رقم : 916

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • قطع تعلقی کرنے والے رشتے داروں سے صلہ رحمی کا کیا حکم ہے؟
  • مزارات پر پھول چڑھانے اور چراغاں کرنے کا کیا حکم ہے؟