کیا مسلمان شراب والے برتن دھوسکتا ہے؟

سوال نمبر:4214
السلام علیکم! میں اٹلی میں ہوں‌ اور یہاں ہوٹل میں برتن دھونے کا کام کرتا ہوں۔ اس میں‌ کبھی کبھی شراب والے گلاس بھی دھونے پڑتے ہیں۔ کیا یہ جائز ہے؟

  • سائل: بلال صابرمقام: اٹلی
  • تاریخ اشاعت: 19 مئی 2017ء

زمرہ: جدید فقہی مسائل

جواب:

جب مسلمان غیرمسلم ممالک میں ملازمت کر رہے ہوں تو مجبوراً انہیں‌ ایسے کام بھی کرنے پڑتے ہیں جو مشتبہ، مکروہ اور ناپسندیدہ ہوں۔ ایسے کام کرتے ہوئے انتہائی احتیاط برتنی چاہیے۔ جب تک کوئی اور کام نہیں ملتا یہ ملازمت جاری رکھیں، لیکن برتن دھوتے ہوئے احتیاطاً ہاتھوں پر گلوز چڑھا لیں۔ مزید وضاحت کے لیے ملاحظہ کیجیے:

کیا مسلمان شراب خانے میں‌ صفائی کی ملازمت کر سکتا ہے؟

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: محمد شبیر قادری

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • کاروباری شراکت کے اسلامی اصول کیا ہیں؟
  • وطن سے محبت کی شرعی حیثیت کیا ہے؟