Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - روزے کی حالت میں‌ مشت زنی کا کیا حکم ہے؟

روزے کی حالت میں‌ مشت زنی کا کیا حکم ہے؟

موضوع: روزہ

سوال پوچھنے والے کا نام: علی فرحان       مقام: نامعلوم

سوال نمبر 3995:
السلام علیکم! روزے کی حالت میں‌ مشت زنی کا کیا حکم ہے؟ اگر اس سے روزہ ٹوٹ‌ جاتا ہے تو کیا اس کے بعد کھانا پینا جائز ہے؟

جواب:

روزے کی حالت میں مشت زنی سے روزہ ٹوٹ جاتا ہے، جس کی قضاء لازم ہے‘ کفارہ نہیں۔ امام مرغینانی رحمۃ اللہ علیہ فرماتے ہیں کہ:

و من جامع فيما دون الفرج فانزل فعليه القضاء.

اور جس نے (روزے کی حالت میں) شرمگاہ کے علاوہ مجامعت کی اور انزال ہوگیا تو اس پر قضاء ہے‘ کفارہ نہیں ہے۔

  1. مرغينانی، الهداية شرح البداية، 1: 125، المکتبة الاسلامية
  2. ابنِ همام، شرح فتح القدير، 2: 341، بيروت، دارالفکر

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: محمد شبیر قادری

تاریخ اشاعت: 2017-05-09


Your Comments