Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - کیا وقوعِ طلاق کے لیے مجلسِ طلاق میں‌ بیوی کی موجودگی ضروری ہے؟

کیا وقوعِ طلاق کے لیے مجلسِ طلاق میں‌ بیوی کی موجودگی ضروری ہے؟

موضوع: طلاق

سوال پوچھنے والے کا نام: محمد سہیل انجم       مقام: کراچی

سوال نمبر 3984:
السلام علیکم! اگر شوہر نے بیوی کی غیرموجودگی میں‌ باقی گھر والوں‌ کے سامنے طلاق دی ہے، تو اس کا کیا حکم ہے؟

جواب:

اگر شوہر نے بقائم ہوش و حواس طلاق دی ہے تو طلاق واقع ہو گئی، اس کے لیے بیوی کا سامنے یا مجلسِ‌ طلاق میں موجود ہونا ضروری نہیں۔ جتنی بار شوہر نے طلاق دی ہے اتنی بار واقع ہو گئی ہے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: محمد شبیر قادری

تاریخ اشاعت: 2016-08-03


Your Comments