کیا پنشن کی رقم لینا شرعاً جائز ہے؟

سوال نمبر:3894
السلام علیکم! گورنمنٹ ملازمین کی تنخواہوں سے ماھانہ GPF.EOBIکی مد میں مخصوص رقم کاٹی جاتی ہے اور ریٹائرمنٹ کے بعد اسی رقم کی بنیاد پر پیینشن دی جاتی ہے۔ کیا پنشن کی رقم لینا شرعاً درست ہے؟

  • سائل: مقصود الٰہیمقام: سنجرپور (صادق آباد)
  • تاریخ اشاعت: 21 اپریل 2016ء

زمرہ: جی پی فنڈ/پراویڈنٹ فنڈ

جواب:

پنشن کی رقم لینا شرعاً جائز ہے۔ اس میں کوئی امر مانع نہیں ہے کیونکہ یہ ملازمین کی تنخواہوں میں سے کٹوتی کر کے ہی ادارے انویسٹمنٹ کرتے ہیں اور اسی کے منافع میں سے ریٹائرمنٹ پر کچھ رقم اکٹھی دیتے ہیں اور باقی پنشن کی صورت میں ماہانہ بنیاد پر دیتے ہیں۔ مزید وضاحت کے لیے ملاحظہ کیجیے:

جی پی فنڈ پر گورنمنٹ کی طرف سے دیا جانے والا معاوضہ لینا جائز ہے؟

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: محمد شبیر قادری

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • قطع تعلقی کرنے والے رشتے داروں سے صلہ رحمی کا کیا حکم ہے؟
  • مزارات پر پھول چڑھانے اور چراغاں کرنے کا کیا حکم ہے؟