Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - کتنی مقدار میں دودھ پینے سے رضاعت ثابت ہوگی؟

کتنی مقدار میں دودھ پینے سے رضاعت ثابت ہوگی؟

موضوع: احکام رضاعت

سوال پوچھنے والے کا نام: انیس احمد       مقام: کراچی

سوال نمبر 3572:
السلام و علیکم مفتی صاحب! اللہ پاک آپ کو اجر دے اور آ پ کو صحت کاملہ عاجلہ عطا فرمائے۔ آمین میرا سوال یہ ہے کہ بچہ کتنا اور کتنی بار کسی عورت کا دودھ پیے تو رضاعت ثابت ہو گی ؟

جواب:

اگر بچے کی عمر اڑھائی سال سے کم ہو اور وہ کسی عورت کا دودھ پی لے تو اس سے رضاعت ثابت ہو جاتی ہے، خواہ اس نے ایک بار پیا ہو اور ایک قطرہ ہی پیا ہو رضاعت کے ثبوت کے لیے کافی ہے۔ اس کی مزید وضاحت کے لیے ملاحظہ کیجیے:

 رضاعت کتنی عمر تک ثابت ہوتی ہے؟

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: محمد شبیر قادری

تاریخ اشاعت: 2015-04-28


Your Comments