Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - کیا مسجد کے فنڈز سے امام، خطیب اور خادم کو تنخواہ دینا جائز ہے؟

کیا مسجد کے فنڈز سے امام، خطیب اور خادم کو تنخواہ دینا جائز ہے؟

موضوع: امامت   |   مسجد   |  مسجدکےاحکام

سوال پوچھنے والے کا نام: محمد نعیم       مقام: ٹھینگ موڑ

سوال نمبر 3549:
السلام علیکم! مسجد کی آمدنی سے امام مسجد، خطیب اور خادم کو ماہانہ تنخواہ دینا جائز ہے یا نہیں؟

جواب:

مسجد کے فنڈز سے امام مسجد، خطیب اور خادم کو ماہانہ تنخواہ دینا جائز ہے۔ مسجد کے لیے جو بھی فنڈز جمع کیے جاتے ہیں ان کا مقصد مسجد کی تعمیروترقی اور آبادکاری ہے۔ امام، خطیب اور خادم مسجد کی آباد کاری میں اہم ترین کردار ادا کرتے ہیں، اس لیے مسجد کی رقم سے ان کو تنخواہ دینے میں کوئی ممانعت نہیں۔ لیکن اگر کوئی شخص مسجد کا چندہ دیتے ہوئے کہے کہ میرا پیسہ صرف مسجد کی عمارت یا تعمیر پر ہی خرچ کیا جائے تو اس کو مسجد کی تعمیر ہی میں خرچ کیا جائے گا۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: عبدالقیوم ہزاروی

تاریخ اشاعت: 2015-03-31


Your Comments