اگر دوران نماز، نماز کا وقت ختم ہوجائے تو کیا حکم ہے؟

سوال نمبر:3502

السلام عليكم ورحمۃ اللہ وبركاتہ مفتی صاحب! راہنمائی فرمائیں کہ:

کیا نمازِ فجر سورج طلوع ہونے سے پہلے پہلے مکمّل کرنا ضروری ہے ورنہ نماز دوبارہ پڑھنی ضروری ہے؟

نماز فجر کے علاوہ باقی چاروں نمازوں کے فرضوں اور عشاء کے وتروں میں فرض یا وتر اپنے وقت میں شروع کر لیے، چاہے صرف تکبیر تحریمہ ہی کہی اور وقت ختم ہوگیا، تو کیا وہ نماز ادا شمار ہوگی؟

جب وقت ختم ہو یا بالکل ختم ہو نےوالا ہو اس وقت سنت یا نفل شروع کر سکتے ہیں؟

جزاک اللہ خیراً

  • سائل: عرفان شریفمقام: راچڈیل۔ یوکے
  • تاریخ اشاعت: 05 مارچ 2015ء

زمرہ: مکروہ اوقات   |  نماز کے اوقات

جواب:

اس سوال کا جواب پہلے گزر چکا ہے، جواب کے مطالعے کے لیے ملاحظہ کیجیے:

نمازِ فجر کے دوران طلوعِ آفتاب ہو جانےسے نماز کا کیا حکم ہے؟

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: محمد شبیر قادری

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • قطع تعلقی کرنے والے رشتے داروں سے صلہ رحمی کا کیا حکم ہے؟
  • مزارات پر پھول چڑھانے اور چراغاں کرنے کا کیا حکم ہے؟