Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - کیا عصر اور مغرب کے درمیانی وقت میں کھانے پینے کی ممانعت ہے؟

کیا عصر اور مغرب کے درمیانی وقت میں کھانے پینے کی ممانعت ہے؟

موضوع: معاملات  |  متفرق مسائل

سوال پوچھنے والے کا نام: سید محمد ظفر امام قادری       مقام: الموڑہ، ائرنچل، بھارت

سوال نمبر 3411:
السلام علیکم و رحمۃ اللہ و برکاتہ! نمازِ عصر اور مغرب کے درمیان کوئی چیز کھانا یا پینا کیساہے؟ کیا کتاب و سنت میں عصر و مغرب کے درمیان کھانے پینے کی ممانعت آئی ہےِ؟ تشفی بخش جواب عطا فرماکر عنداللہ ماجور ہوں۔

جواب:

عصر اور مغرب کے درمیان کھانا کھانے سے نہ تو شریعت نے کہیں منع کیا ہے، اور نہ ہی کوئی صاحبِ عقل اس طرح کی بات کر سکتا ہے۔ یہ جاہلانہ باتیں ہیں جو معاشرے میں مشہور ہو گئی ہیں، ان کی کوئی شرعی حیثیت نہیں ہوتی۔ عصر اور مغرب کے درمیان کھانا پینا جائز ہے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: عبدالقیوم ہزاروی

تاریخ اشاعت: 2014-12-19


Your Comments