کیا جمعہ کو کپڑے دھونا منع ہے؟

سوال نمبر:3405
کیا شریعت میں جمعہ کو کپڑے دھونے سے منع فرمایاگیاہے؟

  • سائل: محمد سہیلمقام: دبئی
  • تاریخ اشاعت: 16 دسمبر 2014ء

زمرہ: معاملات

جواب:

جمعہ کے روز کپڑے نہ دھونے کی ممانعت شریعت نے نہیں فرمائی۔ یہ اور اس طرح کی باتیں سوائے تواہم پرستی کے اور کچھ نہیں۔ شریعت نے جمعہ کے روز کے جو معمولات بیان کیے ہیں، وہ درج ذیل ہیں:

جمعہ کے دن غسل کرنے کی تاکید وارد ہوئی ہے۔ اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم فرماتے ہیں:

غسلُ يومَ الجمعةِ واجبٌ على كلِّ محتلمٍ

  1. بخاری، الصحیح، رقم حدیث: 879
  2. مسلم، الصحیح، رقم حدیث: 846

جمعہ کے دن ہر بالغ پرغسل واجب ہے۔

جمعہ کے روز صاف ستھرے اور اچھے کپڑے پہننے، خوشبو استعمال کرنے، مسواک کرنے کے بارے میں اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کا ارشاد ہے:

غُسْلُ يومِ الجمعةِ على كلِّ مُحْتَلِمٍ . وسِوَاكٌ۔ ويَمَسُّ مِنَ الطِّيبِ ما قَدَرَ عليهِ

مسلم، الصحیح، رقم حدیث: 846

جمعہ کے دن ہر بالغ پر ضروری ہے کہ غسل کرے، اچھے کپڑے پہنے ، اور اگر خوشبو ہے تو استعمال کرے۔

جمعہ کے دن اور رات میں کثرت سے درود کا اہتمام کرنا بھی جمعہ کے معمولات میں سے ایک ہے۔ اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے ارشاد فرمایا:

أكثروا من الصلاة علي في يوم الجمعة وليلة الجمعة، فمن فعل ذلك كنت له شهيدا وشافعا يوم القيامة

الجامع الصغير: 1405

جمعہ کے دن اور رات کثرت سے مجھ پر درود پڑھا کرو، جواس کی تعمیل کرے گا میں قیامت کے دن اس کے لیے گواہ اور سفارشی ہوں گا۔

اگر کسی شخص کا یہ دعویٰ ہے کہ جمعہ کے روز کپڑے دھونے کی ممانعت ہے، تو اسے چاہیے کہ اپنی بات کا حوالہ دے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: عبدالقیوم ہزاروی

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • کاروباری شراکت کے اسلامی اصول کیا ہیں؟
  • وطن سے محبت کی شرعی حیثیت کیا ہے؟