Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - کس غیر مسلم کے ہاتھ کا ذبیحہ کھانا جائز ہے؟

کس غیر مسلم کے ہاتھ کا ذبیحہ کھانا جائز ہے؟

موضوع: مشرکوں کا ذبیحہ   |  ذبح

سوال پوچھنے والے کا نام: بےنام       مقام: نامعلوم

سوال نمبر 3397:
السلام علیکم! کیا کسی سکھ کے ہاتھ کا ذبیحہ کھانا جائز ہے؟

جواب:

مسلمان کے علاوہ صرف اہلِ کتاب (مسیحی اور یہودی) کے ہاتھ کا ذبیحہ کھانا جائز ہے۔ یہ جواز اس بناء پر ہے کہ یہ تینوں مذاہب (مسلمان، مسیحی اور یہودی) ذبح کرتے وقت اللہ کا نام لیتے ہیں۔ باقی کسی اور غیر مسلم کے ہاتھ کا ذبیحہ کھانا جائز نہیں۔ کیونکہ دیگر غیر مسلم نہ تو اہلِ توحید ہیں اور نہ ہی وہ ذبحہ کرتے وقت اللہ کا نام لیتے ہیں۔

مزید وضاحت کے لیے ملاحظہ کیجیے:

یہود و نصاری کا ذبیحہ کن شرائط کے ساتھ جائز ہے؟

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: محمد شبیر قادری

تاریخ اشاعت: 2014-12-23


Your Comments