Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - والدین کی غلطی کی صورت میں ان سے ناراض ہونے پر شریعت کا کیا حکم ہے؟

والدین کی غلطی کی صورت میں ان سے ناراض ہونے پر شریعت کا کیا حکم ہے؟

موضوع: والدین کے حقوق و فرائض   |  خواتین کے حقوق و فرائض

سوال پوچھنے والے کا نام: غیاث احمد       مقام: پشاور

سوال نمبر 3292:
میں ایک سال سے بیرونِ ملک میں مقیم ہوں۔ جب میں یہاں‌ آیا تو میں‌ اپنی بیوی کو آبائی گھر میں چھوڑ آیا۔ میری غیر موجودگی میں‌ میرے والد اور دیگر گھر والوں نے میری بیوی کو بہت تنگ کیا۔ اس مسئلہ کو حل کرنے کے لیے میں‌ اپنی بیوی کو اپنے ساتھ لے آیا۔ مگر اب میں اپنے والدین اور دیگر گھر والوں سے ان کے رویہ کی وجہ ناراض ہوں۔ ایسی صورت میں‌ بتائیں شریعت کا کیا حکم ہے؟

جواب:

والدین سے ناراض ہونے کی ضرورت نہیں، وہ اپنی تمام خوبیوں اور خامیوں کے ساتھ اولاد کے لیے قابلِ احترام ہوتے ہیں۔

آپ اپنی بیوی کو اپنے ساتھ ہی رکھیں تو بہت اچھا ہے، لیکن اس کے ساتھ اپنے والدین کی ناراضگی دور کر کے اور ان کو منا کر ان کی بھی خدمت کریں۔ ان کے روز مرہ کے اخراجات آپ کے ذمہ ہیں لہٰذا وہ ان کو دیں۔ یاد رکھیں بیوی کے حقوق ادا کرنے کے ساتھ ساتھ اپنے والدین کے حقوق بھی آپ ہی نے ادا کرنے ہیں۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: عبدالقیوم ہزاروی

تاریخ اشاعت: 2014-07-07


Your Comments