Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - نعلینِ پاک کا بوسہ لینے کا کیا حکم ہے؟

نعلینِ پاک کا بوسہ لینے کا کیا حکم ہے؟

موضوع: ادب و تکریم و تعظیم مصطفٰی صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم

سوال پوچھنے والے کا نام: غلام فرید       مقام: پاکستان

سوال نمبر 3224:
السلام علیکم! نعلینِ پاک کا بوسہ لینے کا کیا حکم ہے؟

جواب:

ارشادِ باری تعالیٰ ہے:

ذَلِكَ وَمَن يُعَظِّمْ شَعَائِرَ اللَّهِ فَإِنَّهَا مِن تَقْوَى الْقُلُوبِ۔

(الحج، 32:22)

یہی (حکم) ہے، اور جو شخص اﷲ کی نشانیوں کی تعظیم کرتا ہے (یعنی ان جانداروں، یادگاروں، مقامات، احکام اور مناسک وغیرہ کی تعظیم جو اﷲ یا اﷲ والوں کے ساتھ کسی اچھی نسبت یا تعلق کی وجہ سے جانے پہچانے جاتے ہیں) تو یہ (تعظیم) دلوں کے تقوٰی میں سے ہے (یہ تعظیم وہی لوگ بجا لاتے ہیں جن کے دلوں کو تقوٰی نصیب ہوگیا ہو).

لہٰذا نعلینِ پاک کا بوسہ لینا سعادت کی بات ہے، کیونکہ اس کی نسبت بہت بلند ہے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: عبدالقیوم ہزاروی

تاریخ اشاعت: 2014-05-30


Your Comments