Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - مغرب کی آذان اور نماز کے دوران کتنا وقفہ کیا جاسکتا ہے؟

مغرب کی آذان اور نماز کے دوران کتنا وقفہ کیا جاسکتا ہے؟

موضوع: نماز کے اوقات   |  آذان

سوال پوچھنے والے کا نام: ممتاز احمد       مقام: ہجرہ شاہ مقیم

سوال نمبر 3193:
السلام علیکم! مغرب کی اذان اور نماز کے دوران کتنا وقفہ کیا جاسکتا ہے؟

جواب:

نمازِ مغرب کا وقت نمازِ عشاء سے پہلے تک ہوتا ہے۔ غروبِ آفتاب سے تقریبا ڈیڑھ گھنٹہ تک نمازِ مغرب کا وقت ہوتا ہے۔ اس لیے آپ اپنی سہولت کے مطابق مغرب کی اذان کے بعد وقفہ رکھنا چاہتے ہیں تو رکھ سکتے ہیں۔ اس کا مقصد یہ ہونا چاہیے کہ زیادہ سے زیادہ لوگ جماعت میں شامل ہو سکیں۔ رمضان المبارک میں بالخصوص اس کی زیادہ ضرورت ہوتی ہے۔ لوگ افطاری کے بعد مسجد کی طرف آتے ہیں۔ اعتکاف کے دنوں میں افطاری اور وضو کے لیے وقفہ ضروری ہوتا ہے۔ لہٰذا وقت کے اندر اندر اپنی سہولت کے مطابق حسبِ ضرورت وقفہ رکھ سکتے ہیں

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: محمد شبیر قادری

تاریخ اشاعت: 2014-07-04


Your Comments