کیا شریعت میں گواہی دینے کے لیے داڑھی کا ہونا ضروری ہے؟

سوال نمبر:3120
السلام علیکم! اگر کسی عدالت میں دو گواہوں نے گواہی دی اور قاضی نے ایک کی گواہی کو اس وجہ سے مسترد کر دیا کہ اس کی داڑھی سنّت کے مطابق نہیں‌ ہے،کیا ایسی صورت میں اس کی گواہی کو رد کیا جا سکتا ہے؟ موجودہ معاشرے میں تو داڑھی 70 فیصد لوگوں نے رکھی ہی نہیں‌ ہے۔

  • سائل: محمد کامرانمقام: پاکستان
  • تاریخ اشاعت: 15 اپریل 2014ء

زمرہ: شہادت (گواہی)   |  داڑھی کی شرعی حیثیت

جواب:

داڑھی نہ ہونے یا چھوٹی ہونے کی بنا پر کسی کی گواہی رد نہیں کی جا سکتی۔ یہ قول کہ گواہی دینے کے لیے سنت کے مطابق داڑھی ہونی چاہیے، سراسر حماقت پر مبنی ہے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: عبدالقیوم ہزاروی

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • قطع تعلقی کرنے والے رشتے داروں سے صلہ رحمی کا کیا حکم ہے؟
  • مزارات پر پھول چڑھانے اور چراغاں کرنے کا کیا حکم ہے؟