Fatwa Online Durood-e-Minhaj
Home Latest Questions Most Visited Ask Scholar
   
فتویٰ آن لائن - نماز میں اگر امام قرات میں غلطی کرے تو اسے لقمہ دینا کیسا ہے؟

نماز میں اگر امام قرات میں غلطی کرے تو اسے لقمہ دینا کیسا ہے؟

موضوع: عبادات  |  نماز  |  امامت   |  قرات

سوال پوچھنے والے کا نام: ادريس       مقام: کراچی، پاكستان

سوال نمبر 3064:
السلام علیکم میرا سوال یہ ہے کہ نماز میں اگر امام قرات میں غلطی کرے تو اسے لقمہ دینا کیسا ہے؟

جواب:

اگر نماز میں امام بقدر حالت قرات یعنی بڑی ایک آیت یا چھوٹی تین آیات کے برابر قرات کرنے کے بعد بھول جائے تو اسے لقمہ نہ دیا جائے نہ ہی امام کو لقمے کا انتظار کرنا چاہیے بلکہ رکوع کر دے۔ امام کے رکتے ہی لقمہ نہیں دے دینا چاہیے، بلکہ تھوڑا توقف کر لے تو لقمہ دینا چاہیے۔ اگر ایسی غلطی جس سے فساد کا معنی پیدا ہو تو مقتدی لقمہ دے۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: عبدالقیوم ہزاروی

تاریخ اشاعت: 2014-04-09


Your Comments