کیا کسی ملازمت کیلئے اہلیت کا حامل شخص رشوت دے سکتا ہے؟

سوال نمبر:3050
السلام و علیکم میرا سوال یہ ہے کہ جیسا کہ ہم سب جانتے ہیں کہ ہمارے ملک میں کرپشن بہت زیادہ ہے اور میرٹ پر سرکاری ملازمت حاصل کرنا تقریبا نا ممکن ہے۔ پبلک سروس کمیشن جیسے ادارے بھی اب اس کرپشن سے محفوظ نہیں۔ میں ایک سرکاری ادارے میں ملازمت کرنا چاہتا ہوں کیونکہ بنستب پرائیویٹ نوکری کے سرکاری ملازمت زیادہ محفوظ ہوتی ہے۔ لیکن مسئلہ یہ ہے کہ جو تعلیمی قابلیت اور تجربہ اس سرکاری جاب کے لئے درکار ہے وہ ہونے کے باوجود بھی مجھے یہ ملازمت حاصل کرنے کے لئے دس لاکھ روپے رشوت ادا کرنی پڑے گی۔ اگر اس ملازمت کے لئے شفاف ٹیسٹ اور انٹرویو منعقد کیا جائے تو مجھے یقین ہے کہ میں اسے میرٹ پر حاصل کرنے کی صلاحیت رکھتا ہوں مگر ایسا ہوگا نہیں کیونکہ یہ پوسٹ صرف پیسوں پر فروخت ہوگی۔ میرا سوال یہ ہے کہ اس صورتحال میں اگر میں بحالت مجبوری پیسے دے کر یہ پوسٹ خریدتا ہوں تو کیا میں رشوت دینے کے گناہ کا مرتکب ہوں گا؟ کیونکہ میں نے ایک جگہ پڑھا ہے کہ اس صورتحال میں اگر تعلیمی قابلیت، تجربہ اور اہلیت ہو لیکن بغیر رشوت دیئے چارہ نہ ہو تو تمام گناہ رشوت طلب کرنے والے پر ہوگا کیونکہ اس صورت میں میں نے کسی حقدار کا حق نہیں مارا چونکہ میں خود اس ملازمت کا حقدار ہوں اور اسکی اہلیت رکھتا ہوں۔ برائے مہربانی رہنمائی فرمائیں۔

  • سائل: محمد قوی خانمقام: کوئٹہ، پاکستان
  • تاریخ اشاعت: 30 جنوری 2014ء

زمرہ: رشوت

جواب:

اس سوال کا جواب پہلے گزر چکا ہے
سوال کے مطالعہ کے لیے یہاں کلک کریں۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی: عبدالقیوم ہزاروی

اہم سوالات
  • بٹ کوئن کی ٹریڈنگ کا کیا حکم ہے؟
  • قطع تعلقی کرنے والے رشتے داروں سے صلہ رحمی کا کیا حکم ہے؟
  • مزارات پر پھول چڑھانے اور چراغاں کرنے کا کیا حکم ہے؟